تعلیم و تربیت

تعلیم و تربیت

 

علم کاحاصل کرنا ایک مقدس فریضہ ہے اوریہ ہر مسلمان مرد اور عورت پر واجب ہے ۔ ;علم اسلام میں ایک اہم مقام پرفائز ہے ۔ اللہ وحدہ لاشریک نے قرآن کے نزول کے سلسلہ کی شروعات"اقراء" (پڑھ! )سے فرمایا اللہ سبحانہ وتعالی کا فرمان ہے: (اقْرَأْ بِاسْمِ رَبِّكَ الَّذِي خَلَقَ ) ترجمہ(پڑھ پیدا کرنے والے اپنے رب کے نام سے ) نیزقرآن و احادیث میں کئیمقامات پرعلمکی اہمیت اورفوائد کا ذکر کیا گیا ہے ۔

قرآن مجید میں علم کےمتعلق اللہ وحدہ لاشریک کے ارشادات میں ;سے چند درج ذیل ہیں:

 

يُؤتِي الْحِكْمَةَ مَن يَشَاء وَمَن يُؤْتَ الْحِكْمَةَ فَقَدْ أُوتِيَ خَيْرًا كَثِيرًا)(سورة البقرة۔ 269)

ترجمہ: (اللہ جسے چہتا ہے حکمت دیتا ہے اور جس شخص کو حکمت دیگئ تواُسے بہت بھلائ عطا کی گئ)

 

وَقُل رَّبِّ زِدْنِي عِلْمًا) (سورة طه۔ 114)

ترجمہ: (اور کہیے! اے میرے رب مجھے علم میں زیادہ کر)

 

قُلْ هَلْ يَسْتَوِي الَّذِينَ يَعْلَمُونَ وَالَّذِينَ لَا يَعْلَمُونَ إِنَّمَا يَتَذَكَّرُ أُوْلُوا الْأَلْبَابِ(سورة الزمر۔ 9)

ترجمہ: کہدیجیے! کیا جو لوگ علم رکھتے ہیں اور جو علم نہیں رکھتے، برابرہو سکتے ہیں؟

 

يَرْفَعِ اللَّهُ الَّذِينَ آمَنُوا مِنكُمْ وَالَّذِينَ أُوتُوا الْعِلْمَ دَرَجَاتٍ وَاللَّهُ بِمَا تَعْمَلُونَ خَبِيرٌ) (سورة المجادلة۔ 11)

ترجمہ:(تم میں سے جو ایمان لائے ہیں اور جنہیں علم دیاگیا ہے، اللہ ان کے درجات بلند کرےگا)

 

حدیث:

نبی کریم ;ﷺ نے فرمایا: "جو کوئی (دین کا) علم سیکھنے کے راستے میں نکلتا هے جد و جہد کر تا هے الله اسکے لئے جنت کا راستا آسان کر دیتا هے۔" (صحیح بخاری، کتاب العلم 10

عوام الناس میں صحیح دینی تعلیم کی اہمیت اورفوائد کواجاگر کر اُنہیں اس تعلیم کی طرف راغب کرنے اور ان میں دینی شعور کو بیدار کرنے کے مقصد کے تحت شہر ی جمعیت اہل حدیث حیدرآباد اور سکندرآباد نے 2013 میں ;مرد و خواتین کے لئےخصوصی تدریسی پروگرام ۔ دورہ شرعیہ اور دورہ علمیہ۔ کا انعقاد عمل میں لایا ۔ جو الحمد للہ آج دونوں شہروں میں جمعیت کی راست نگرانی میں کامیابی کے ;ساتھ چلائے جارہے ہیں۔ الحمد للہ، ان پروگراموں کو عوام الناس کا زبردست رسپانس حاصل ہے۔

 

کاپی رائٹ © 2016 جمعیت اہل حدیث حیدرآباد اور سکندراباد, جملہ حقوق محفوظ ہیں